Image default
ٹیکنالوجی

کورونا وائرس کے پیش نظر ریسٹورینٹ میں روبوٹ سروس کا آغاز

کورونا وائرس کے پیش نظر ریسٹورینٹ میں روبوٹ سروس کا آغاز

دنیا بھر میں جہاں لاک ڈاؤن میں نرمی کی جارہی ہے وہیں مہلک کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ہر ممکن اقدامات بھی کیے جارہے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ اب مختلف ریسٹورینٹس میں ویٹرز کے بجائے روبوٹ سروس کو ترجیح دی جارہی ہے۔

حال ہی میں حفاظتی اقدام کے پیشِ نظر جنوبی کوریا کے ایک کیفے میں کافی بنانے کے لیے روبوٹ کا استعمال کیا گیا اور اب اسی طرح نیدرلینڈ کے شہرماستریخت میں بھی کچھ ہوٹلز میں روبوٹ سروس استعمال کی جارہی ہے لیکن یہ صرف کافی کیلئے نہیں بلکہ تمام کاموں کے لیے ہے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق داداوان ریسٹورینٹ سمیت مختلف ہوٹلز میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے تمام کام روبوٹ کی مدد سے کیے جارہے ہیں جیسے صاف صفائی، کھانا پیش کرنا، یا پھر صارفین کو خوش آمدید کہنا، ہینڈ سینی ٹائز کروانا۔

داداوان ریسٹورینٹ میں تین روبوٹس سے کام لیا جارہا ہے جو ہر صارف کی ٹیبل پر آرڈر لے کر 20 سیکنڈ تک کھڑا ہوتا ہے اور پھر آرڈر پورا کرنے کے بعد پلٹ جاتا ہے۔

یہاں تک کہ مذکورہ ریسٹورینٹ میں خواتین اور مرد حضرات کے لیے علیحدہ علیحدہ روبوٹ کا تعین کیا گیا ہے۔

فوٹو رائٹرز

اس روبوٹ سروس کو ریسٹورینٹ کے مالک ٹائمر اور ریموٹ سے ہینڈل کر رہے ہیں جن کا کہنا ہے کہ ہم اس کا استعمال ان حالات میں کافی محفوظ سمجھتے ہیں۔

Related posts

کورونا کی ویکسین اکتوبر کے آخر تک تیار ہو جائے گی: امریکی دوا ساز کمپنی کا دعویٰ

Talon News

پانی میں شامل پلاسٹک کو بلبلوں سے باہر نکالا جاسکتا ہے

Talon News

سورج کی روشنی جیسی تمام صفات والا ‘مصنوعی سورج’

Talon News

Leave a Comment