Image default
Urdu News پاکستان

پیپلز پارٹی نے عزیر بلوچ جے آئی ٹی پر وفاقی وزرا کے الزامات مسترد کردیئے

پیپلز پارٹی نے عزیر بلوچ جے آئی ٹی پر وفاقی وزرا کے الزامات مسترد کردیئے
پیپلز پارٹی نے حکومتی وزراء کی جانب سے عزیر بلوچ اور نثار مورائی کی جے آئی ٹیز کو مسترد کیے جانے پر کہا ہے کہ وفاقی وزرا چینی اسکینڈل سے توجہ ہٹانے کے لیے الزام تراشی کررہے ہیں۔

یہ بات مشیر قانون و ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب، صوبائی وزیر اطلاعات ناصر حسین شاہ، صوبائی وزیر سعید غنی اور رکن قومی اسمبلی عبدالقادر پٹیل نے منگل کو ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کہی۔

مرتضی وہاب نے کہا کہ علی زیدی نے پریس کانفرنس میں جو باتیں دہرائیں وہ سوشل میڈیا پر کئی برس سے چل رہی تھیں جب کہ کچھ ٹی وی اینکرز اس پر پیپلز پارٹی کے بغض میں پروگرام کیے، سندھ حکومت نے جو وعدہ کیا تھا وہ کل پورا کیا، آفیشل ڈاکیومنٹ ہم نے دستخط کے ساتھ پیش کردیے۔

انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی میں سات سرکاری افسران ممبر ہوتے ہیں، عزیربلوچ کی جے آئی ٹی بھی ان افسران نے دستخط کرکے محکمہ داخلہ میں جمع کرائیں، علی زیدی نے قومی اسمبلی کے فلور پر جھوٹ بولا، میں نے انہیں پچھلے ہفتے چیلنج کیا تھا لیکن وہ الزامات ثابت نہیں کرسکے، رپورٹ ثابت کرتی ہیں کہ سندھ حکومت کا موقف درست تھا لیکن سمجھ نہیں آیا کہ علی زیدی کو رپورٹ کون دے رہا ہے؟ یہ جے آئی ٹی کیا اپنے لیپ ٹاپ پر بناتے ہیں ؟ دراصل علی زیدی کا دماغی توازن درست نہیں ہے۔

Related posts

صدر عارف علوی کیخلاف مواخذے کی تحریک لانے کی تیاری

talonnews

روان سال پاکستان میں کرپشن بڑھی، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل

Talon News

لاہور سمیت پنجاب بھر میں آٹے کا کوئی بحران نہیں، صوبائی وزرا کا دعویٰ

Talon News

Leave a Comment